شعبان المعظم میں کسی بھی حافظ قرآن سے سورۃ الاعراف کی آیت نمبر 204سات مرتبہ کان میں سن لیںزبردست معجزہ ہو گا

آج کو جو وظیفہ ہے جو بہرے پن کے خاتمے کا وظیفہ ہے یعنی آپ کے گھرمیں آپ کا کوئی جاننے والا ، آپ کا بیٹا بیٹی ، آپ کو کوئی رشتہ دار یا کسی کو سنائی نہیں دیتا تو وہ عمل کریں۔ انشاءاللہ بہرے پن سے نجات ملے گی۔ ایک زبردست وظیفہ بتاتے ہیں۔ آج کو جو وظیفہ ہے وہ قرآن پاک کی آیت کا ہے ۔ قرآن پاک کی سورت الاعراف کا ہے۔ آپ نے اس کی ایک آیت دو سو چار کو پڑھناہے۔ جس شخص کو سنائی نہ دیتا ہوں آپ نے اس کے کان میں روزانہ سات مرتبہ اس آیت کو دم کرنا ہے۔ انشاءاللہ بہرے پن سے نجا ت ملے گی۔ کیونکہ قرآن پاک کی آیت ہے۔ اور بہرے پن سے نجات ملے گی۔ اور بہترین طریقے سے آواز سنائی دینے لگے گی۔ مرض کے خاتمے تک اس عمل کو جاری رکھنا ہے۔ اس عمل کور وازنہ سات مرتبہ پڑھ کر اس آیت کریمہ کو اس کے ایک کان میں دم کردیں۔ چاہے آپ کسی بھی کان میں دم کرسکتے ہیں چاہے دائیں یا بائیں صرف سات مرتبہ پڑھ کر دم کرنا ہے۔ کان کا پردہ پھٹ جانے یا گل جانے سے آدمی بہر ا ہوجاتا ہے ۔ اسی طرح پیدائشی بہرے پن کا علاج ناممکن ہے البتہ عارضی بہرے پن یا کسی کو اونچا سنائی دیتا ہو تو اس کا علاج ہوسکتا ہے۔ اس علاج کے لیے ذیل کا نسخہ نہایت قابل اعتماد اور بارہا کا آزمودہ ہے ۔ اس مرض میں ذیل نسخہ نہایت آسان، بے ضرر اور شافی ہے۔ استعمال ک ےبعد حیرت انگیز نتائج دے گا۔ کارآمد ہونے کے ساتھ ساتھ نہایت سستا اور ہر جگہ باآسانی دستیاب ہوسکتاہے۔ جو چیزیں نوٹ کرنی ہیں۔ وہ مغز کڑوا بادام بیس گرام ، روغن دس گرام ، اور پانی دو سو گرام لینا ہے۔ کڑوے بادام کا تیل بھی پنساری سے مل جاتا ہے اگر تیل نکالنے والی مشین دستیا ب ہوتو باداموں کا اس مشین کے ذریعے تیل نکلوائیں یا پھر مندرجہ بالانسخے کے مطابق تیل حاصل کریں۔ سب سے پہلے بادام کی گریاں کوٹ لیں۔ پھر اس کو ایک پاؤ پانی میں ڈال کر اچھی طرح سے پکائیں۔ جب تمام پانی جل جائے اور گریوں کاتیل بچ جائے تو چھان کر تیل الگ کر لیں۔ اس میں روغن گلاب ملالیں۔ دوا تیا ر ہے۔ اس کو استعمال کرنے سے پہلے اچھی طرح سے ہلائیں۔ دو قطرے صبح، دو قطرے دوپہر اور دو قطرے شام میں کان میں ڈالیں۔ انشاء اللہ کچھ عرصے میں آپ کو نمایا ں فرق نظر آئے گا۔ سائنسدانوں کویقین ہے کہ وہ پیدائشئ طور پر بہرے افراد کے علاج میں کامیابی کے بہت قریب ہیں، ایسے افراد کے کانوں میں اسٹیم سیلز لگائے جائیں گے جو کہ اس موروثی مرض کے شکا ر افراد میں پائی جانے والی خرابی کو دور کریں گے۔ برطانوی ماہرین کے مطابق طبی ماہرین نے نئے سیلز کی افزائش کا طریقہ کا ردریافت کر لیا ہے جو کان میں انجیکشن کے ذریعے لگائے جائیں گے۔ یہ سیلز کان میں موجود خراب سیلز کی جگہ لے لیں گے، یہ طریقہ علاج پانچ سے دس برس میں لوگوں کو دستیاب ہوسکے گا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *