شوال کے مہینے میں مقدر چمکا دینے والا عمل سجدے سے سر اٹھاتے ہی دعا کا ایسا کمال جو آپ کی تقدیر بدل دے

شوال اسلامی سال کا دسواں اور حج کا پہلا مہینہ ہے۔ اللہ تعالیٰ کا ارشاد ہے:اَلْحَجُّ اَشْھُرٌمَّعْلُوْمٰتْ۔حج کے مہینے (طے شدہ اور) معلوم ہیں۔علما کی تصریح کے مطابق حج کے مہینے جن کے متعلق اللہ تعالیٰ نے اس آیت میں ارشاد فرمایا ہے؛اس سے مراد شوال،ذوالقعدہ اور ذوالحجہ کا پہلا عشرہ ہے۔ حضرت عمرؓ،ان

کے صاحب زادے حضرت عبد اللہؓ، حضرت علیؓ، حضرت ابن مسعودؓ، حضرت عبداللہ ابن عباسؓ اور حضرت عبداللہ ابن زبیرؓ رضی اللہ عنہم وغیرہ سے یہی روایت کیا گیا ہے اور یہی اکثر تابعینؒ کا قول ہے۔ علما کا اس پر اجماع ہے کہ اشہرِ حج تین ہیں،جن میں سے پہلا شوال (اور دوسرا ذوالقعدہ) ہے۔اور حج کے مہینوں میں سے ہونا شوال کے مہینے کے لیے عظمت و فضیلت کی دلیل ہے۔آج بھی بہت سے لوگ اسی مہینے سے حج کے لیے رختِ سفر باندھتے ہیں اورشوال المکرم سے حج کی تیاریاں شروع ہوجاتی ہیں، جسے ماہِ فطر بھی کہتے ہیں، اس لیے کہ یکم شوال عید اور گناہوں کی مغفرت کا دن ہے، جیسا کہ حدیثِ انسؓ میں تصریح ہے کہ رمضان کے روزے وغیرہ سے فراغت پر عیدگاہ آنے والوں کو اللہ تعالیٰ اپنے فرشتوں کو گواہ بناکر مژدہ سناتے ہیں کہ بخشے بخشائے اپنے گھروں کو لوٹ جاؤ ماہِ شوال میں عید الفطر اور صدقۂ فطر کے علاوہ ستۂ شوال (یعنی شوال کے چھے روزے) صحیح احادیث سے ثابت ہیں اور جمہور فقہا کے نزدیک یہ روزے سنت ومستحب ہیں۔فرض، واجب اور مسنون روزوں کے بعد تمام نفل روزے، جب کہ ان کے لیے کوئی کراہت ثابت نہ ہو، مستحب ہیں، لیکن بعض روزے ایسے ہیں کہ ان میں ثواب زیادہ ہے، من جملہ ان کے ستۂ شوال کے روزے بھی ہیں۔

شیخ عبدالحق محدث دہلویؒ فرماتے ہیں کہ اس مہینے میں جو امر صحت کے ساتھ ثابت ہوا ہے، من جملہ ان کے چھے دن کے روزے بھی ہیں۔حضرت ابو ایوب انصاری رضی اللہ عنہ بیان کرتے ہیں، رسول اللہ ﷺ نے ارشاد فرمایا: جو شخص رمضان کے روزے رکھے، پھر اس کے بعد شوال کے چھے روزے رکھے، تو یہ عمل ہمیشہ روزے رکھنے کی طرح ہے۔یہ اس وجہ سے ہے کہ امت محمدیہ ﷺ کو ہر ایک نیکی کا ثواب دس گنا بڑھا کر دیا جاتا ہے اور ان روزوں کے متعلق تو صراحت موجود ہے۔ حضرت ثوبان رضی اللہ عنہ روایت کرتے ہیں، رسول اللہ ﷺنے ارشاد فرمایا: جو شخص عید الفطر کے بعد چھے دن روزے رکھے، اس کو پورے سال روزے رکھنے کا ثواب ملے گا، (کیوں کہ) جو ایک نیکی لائے، اس کو دس گنا اجر ملے گا۔ماہ شوال میں ایک عمل جو مقدر کو چمکا دیتا ہے وہ یہ ہے کہ وضو کیجئے اور سونے سے پہلے 11 بار درود ابراہیمی پڑھ لیجئے اور پھر سجدہ کیجئے اور اس سجدے میں 33 بار یا غنی پڑھیئے اور 31 بار یا رزاق پڑھیئے اور پھر سجدے سے اٹھ جائیے اور پھر 11 بار درود پاک پڑھ لیجئے اور پھر اللہ پاک سے دعا کیجئے عاجزی و انکساری اختیار کیجئے اور اللہ کے سامنے اپنے تمام مسائل پیش کیجئے انشاء اللہ تعالیٰ آپ کے تمام مسائل حل ہوجائیں گے۔اللہ ہم سب کا حامی وناصر ہو۔آمین

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *