قرآن پاک کی یہ ایک آیت جس نے پڑھ لی انشاء اللہ تا حیات اسے کو ئی خطر ناک بیمار نہیں لگے گی

ہمیں معلوم ہونا چاہئے کہ قرآن پاک خود مریض کو پڑھنا چاہئے۔ جدید ترین ریسرچ سے ثابت ہوا ہے کہ مریض پر سب سے زیادہ اثر خود اسکی اپنی آواز کا ہوتا ہے۔ کسی بھی انسان کی آواز کے مقابلے میں خود مریض کی آواز بیمار خلیوں پر زیادہ اثر ڈالتی ہے۔ مریضوں کو ہمارا مشورہ یہی ہوگا کہ وہ اپنے مرض سے متعلقہ قرآنی آیتیں خود پڑھ کر اپنے اوپر پھونکیں۔

اسے علاج کے سلسلے میں خود کفایتی یا از خود علاج کا نام دے سکتے ہیں۔ بعض اوقات مریض بڑی مشکل میں ہوتا ہے ۔ وہ نہ تو مطلوبہ توجہ سے قرآن پڑھ پاتا ہے اور نہ ہی صحیح طریقے سے قرآنی آیات کی تلاوت کرسکتا ہے۔

ایسی حالت میں کسی جھاڑ پھونک کرنے والے سے مدد لی جاسکتی ہے۔ آیات شفا کی تلاوت کرنے والے کی توجہ کا محور مرض ہو ،وہ اس سوچ کیساتھ قرآنی آیات پڑھے گویا مریض آیات کریمہ کی برکت سے بالکل شفایاب ہوچکا ہے۔ہمارا مشورہ ہے کہ قرآنی آیات اتنی اونچی آواز میں پڑھی جائیں کہ مریض پڑھنے والے کی تلاوت سن رہا ہو ۔

دوسرے الفاظ میں یوں کہہ لیجئے کہ تلاو ت اونچی آواز سے ہو زیر لب نہ ہو ۔ ریسرچ نے ثابت کیا ہے کہ مریض کے جسم کے خلیوں پر صوتی اثرات پڑتے ہیں۔ خصوصاکینسر کے مرض میں خلیے قرآنی آیات کی تلاوت کا اثر بہت زیادہ قبول کرتے ہیں۔امراض پر قرآن پڑھنے کاپسندیدہ وقت؟قرآن پاک کے ذریعے امراض کے علاج کا کوئی خاص وقت مقرر نہیں۔ سارے اوقات مناسب ہیں۔

مریض قیام و جلوس کی حالت کے علاوہ لیٹے ہوئے بھی قرآنی آیتوں کی تلاوت کرسکتا ہے۔ بہتر ہوگا کہ مریض صبح اور شام از خود قرآنی آیات پڑھ کر پھونکنے کا اہتمام کرے۔ صبح بیدار ہونے کے بعد اور رات کے وقت سونے سے قبل یہ کام کرے۔ اپنے مرض کیلئے موزوں آیتو ںکی تلاوت 7بار کیا کرے۔ 7کا عدد بیحد اہم ہے۔

نبی کریم آیات شفاکی تلاوت اور دعائیہ آیتیں 7،7بار پڑھا کرتے تھے۔ قرآن سن کر علاج کیا جائے؟مریض کو روزانہ کئی گھنٹے قرآن کریم کی تلاو ت سننی چاہئے۔ ایسا کرنے سے علاج مکمل ہوگا۔ جب بھی وقت اجازت دے قرآن کی تلاوت سن لینی چاہئے۔ مریض کو قرآن پاک کی ان آیتوں میں غوروفکر کرنا چاہئے جنہیں وہ سن رہا ہو کیونکہ قرآن میں تدبر و تفکر اور اسکے معانی کو سمجھنے کی کوشش کرنا بھی ایک طرح کا علاج ہے۔

علاج بالقرآن کو فعال بنانے کاایک طریقہ یہ ہے کہ مریض سوتے ہوئے تجوید کے ساتھ قرآن کی تلاوت سننے کا اہتمام کرے۔مریضوں بلکہ صحت مند انسانوں کو بھی یہ بات معلوم ہونی چاہئے کہ نیند کے عالم میں بھی انسانی دماغ کام کرتا رہتا ہے۔ دماغ قرآن پاک کی آواز سے متاثر ہوتا ہے قرآن میں ہر بیماری کی شفاء موجود ہے تو ہمیں چاہیے کہ ہمیں ڈاکٹر کے پاس جانے سے پہلے ہمیں قرآن پڑھ لینا چاہیے کیونکہ اس قرآن میں ہر طرح کی بیماری کا علاج ہے۔

Sharing is caring!

Categories

Comments are closed.