ماہ شعبان کا دوسرا جمعہ آگیا ہے دولت مند بننے کا سنہری موقع مل گیا

شعبان ایک بابرکت مہینہ ہے۔ نبی کریمؐ اس مہینے میں اکثر روزہ رکھا کرتے تھے۔ حضرت عائشہ صدیقہ ؓ فرماتی ہیں رسول اکرمؐ کو تمام مہینوں سے زیادہ یہ بات پسند تھی کہ شعبان کے روزے رکھتے رہتے، یہاں تک کہ رمضان کا مہینہ آجاتا۔ ماہ شعبان کی پندرہویں رات شب برأت کہلاتی ہے۔ برأت کے معنی دُوری اور چھٹکارے کے ہیں۔شیخ عبدالقادر جیلانیؒ فرماتے ہیں۔ شب برأت کو شب برأت اس لیے کہتے ہیں کہ اس رات میں دو قسم کی برأت ہوتی ہے۔ ایک برأت تو بدبختوں کو خداتعالیٰ کی طرف سے ہوتی ہے۔ دوسری برأت خدا کے دوستوں کو ذلّت اور خواری سے ہوتی ہے۔ جس طرح مسلمانوں کے لیے اس روئے زمین پر عید کے دو دن ہیں۔ اس طرح فرشتوں کے لیے دو راتیں (شب برأت، شبِ قدر) عید کی راتیں ہیں۔ مسلمانوں کی عید دن میں رکھی گئی کیوں کہ وہ رات کو سوتے ہیں اور فرشتوں کی عید رات میں رکھی گئی کیوں کہ وہ سوتے نہیں۔حضرت علی کرم اﷲ وجہہ سے روایت ہے کہ رسول اکرمؐ کا ارشاد ہے کہ جب نصف شعبان کی رات آجائے تو تم اس رات میں قیام کرو۔

اس لیے کہ اس رات میں اﷲ تعالیٰ سورج غروب ہونے سے طلوع فجر تک قریب کے آسمان پر نزول فرماتے اور ارشاد فرماتے ہیں: کیا ہے کوئی! مجھ سے مغفرت طلب کرنے والا جس کی میں مغفرت کروں، کیا ہے کوئی! مجھ سے رزق کا طالب میں اس کو رزق عطا کروں، کیا ہے کوئی! کسی مصیبت یا بیماری میں مبتلا کہ میں اس کو عافیت دوں، کیا ہے کوئی ایسا۔۔۔؟ کیا ہے کوئی ایسا۔۔۔ ؟ اﷲ تعالیٰ برابر یہ آواز دیتے رہتے ہیں یہاں تک کہ سورج طلوع ہوجاتا ہے۔حضرت ابُوموسیٰ اشعریؓ سے روایت ہے کہ رسول اکرمؐ نے ارشاد فرمایا: بے شک اﷲ متوجہ ہوتے ہیں نصف شعبان کی رات میں، پس اپنی تمام مخلوق کی مغفرت فرما دیتے ہیں سوائے مشرک اور کینہ رکھنے والے کے۔ حضرت عثمان بن ابی العاصؓ کی روایت میں زانی کا ذکر بھی آیا ہے اور حضرت عائشہ ؓ کی ایک روایت میں رشتے داری توڑنے والا، تخنوں سے نیچے ازار لٹکانے والا۔

اپنے ماں باپ کا نافرمان اور شراب کے عادی کا تذکرہ بھی آیا ہے۔ اس رات بخشش ہوتی ہے۔ چناں چہ حضور ﷺ نے فرمایا کہ بے شک اس رات میں اﷲ تعالیٰ سب مسلمانوں کو بخش دیتا ہے مگر اس رات کاہن اور جادوگر اور دل میں بغض و دشمنی رکھنے والے، شراب کے عادی، ماں باپ کے نا فرمان اور زنا کے عادی کی بخشش نہیں ہوتی۔ جب تک یہ لوگ سچے دل سے توبہ کر کے باز نہ آجائیں۔شعبان المعظم کی بہت بابرکت گھڑیاں چل رہی ہیں اس سے پہلے رجب المرجب شریف کا مہینہ گزرا وہ بھی بڑی عظمتوں والا مہینہ گزرا ہے ۔ ابھی شعبان المعظم شریف کا پہلا عشرہ اختتام پذیر ہونیوالا ہے آج 9 شعبان المعظم شریف کا بابرکت دن چل رہا ہے ۔ آج کا وظیفہ آپ نے پاک وصاف ہوکر اول وآخر گیارہ مرتبہ درود شریف پڑھنا ہے اور سورۃ القریش کو 13مرتبہ پڑھنا ہے ۔ انشاء اللہ یہ عمل کرنے سے اللہ تعالیٰ ہم رحمتوں کے نزول فرمائے گا۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *