کتنے بد نصیب ہیں وہ انسان جو نماز میں یہ سورت نہیں پڑھتے

جواللہ نے تمہارے نصیب میں فائدہ لکھ دیا اس سے بڑھ کر کوئی فائدہ نہیں دے سکتا اللہ نے جو تمہارے نصیب میں نقصان لکھ دیا اس سے زیادہ تمہیں کوئی نقصان دے نہیں سکتا قلمیں اٹھا لی گئی اور صحیفے خشک ہوگئے تقدیر لکھ دی گئی

اب سوال کرنا ہے تو اللہ سے مانگنا ہے تو اللہ سے ڈرنا ہے تواللہ سے اللہ کے حکموں کو سامنے رکھنا ہے اللہ کے منع کردہ کاموں سے منع ہونا ہے اس طرح اسلام پر چلو اس طرح اللہ کے ساتھ تعلق مضبوط کرو نتیجہ کیا نکلے گا

پوری دنیا نہ تو تمہیں کوئی نقصان پہنچا سکے گی نہ کوئی فائدہ دے سکے گی سوائے جو اللہ نے تمہارے نصیب میں لکھ دیا ہے مسلم حدیث نمبر 395 ہے سیدنا ابو ہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ بیان کرتے ہیں کہ میں نے رسول اللہ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم سے سنا

آپ صلی اللہ تعالیٰ علیہ وآلہ وسلم فرما رہے تھے حدیث قدسی بیان کرتے ہوئے میں نے نماز کو اپنے اور اپنے بندے کے درمیان آدھا آدھا تقسیم کردیا ہے اور میرے بندے نے جو مانگا وہ اس کے لئے ہے جب بندہ کہتا ہے

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *