3دن میں پندرہ کلو وزن کم کرنے کا انتہائی آسان عمل

موٹاپا انسانی جسم کی ایک طبعی حالت ہے جس میں جسم پر چربی چڑھ جاتی ہے، وزن زیادہ ہو جاتا ہے اور توند نکل آتی ہے۔ماہرین آج تک اس سوال کا تسلی بخش جواب نہیں دے سکے کہ بعض انسان کیوں موٹے ہوتے ہیں؟ انسان کے موٹے ہونے یا ان کے وزن بڑھنے کے حوالے سے کئی تحقیقات کی جاچکی ہیں۔ہر بارکوئی نہ کوئی نیا سبب سامنے آتا ہے۔

زیادہ تر لوگ یہی سمجھتے ہیں کہ انسان کا طرز زندگی، کھانے پینے کا شوق ہر وقت بیٹھے رہنے، سوتے رہنے اور ورزش نہ کرنے کی وجہ سے وزن بڑھتا ہے اور وہ موٹاپے کا شکار ہوجاتا ہے۔ تاہم یہ بھی دیکھا گیا ہے کہ دنیا میں بعض افراد ایسے بھی ہیں جو ہر طرح کی غذائیں بھی کھاتے ہیں، زیادہ وقت بیٹھے رہنے سمیت کوئی ایکسر سائز بھی نہیں کرتے لیکن پھر بھی وہ موٹاپے کا شکار نہیں ہوتے۔موٹاپا کی وجہ سے یقیناً کئی طرح کے مسائل درپیش آتے ہیں۔ ترقی پذیر ممالک سمیت ترقی یافتہ ممالک میں لوگوں کے مرنے کا ایک سبب موٹاپا بھی ہے۔ ایک اندازے کے مطابق اس وقت دنیا بھر میں 70 فیصد افراد موٹاپا یا اضافی وزن کا شک۔ار ہیں۔ ایسے افراد موٹاپا یا اپنا وزن کم کرنے کے لیے جہاں زیادہ وقت بھوکے رہنے کو ترجیح دیتے ہیں وہیں وہ مختلف ایکسرسائزز بھی کرتے رہتے ہیں۔یہ بھی دیکھا گیا ہے کہ بعض افراد غذا کم کھانے اورایکسرسائز کرنے کے با وجود موٹاپے کا شکار ہوتے ہیں۔ سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ ایسا کیوں ہوتا ہے اور انسان موٹا کیسے اور کن چیزوں سے ہوتا ہے؟آج ہم آپ کو وزن کم کرنے کا طریقہ بتائیں گے ۔ اگر آپ چاہتے ہیں کہ ہمارا وزن بہت زیادہ بڑھ گیا ہے ہم اس کو کیسے ختم کریں تو بہت آسان نسخہ بتائیں گے اگر آپ کسی بھی فنکشن پر جاتے ہیں تو آپ کو بہت زیادہ موٹاپا محسوس ہوتا ہے

کہ ہم اچھے نہیں لگ رہے ہیں ہم نے جو کپڑے پہنے ہیں وہ اچھے نہیں لگ رہے موٹاپے کیوجہ سے اس طرح کے کئی سوالات ذہن میں آتے ہیں۔ آج آپ کواتنا سستا نسخہ بتائیں گے کہ جس کے استعمال سے آپ اپنے وزن کو کم کرسکتے ہیں۔آ پ نے کرنا یہ ہے کہ ایک گلاس نیم گرم پانی لیکر اس میں ایک چوتھائی چمچ کالی مرچ لیکر دو بڑے چمچ لیموں کا رس لے لینا ہے ۔اس میں ایک بڑا چمچ شہد کا بھی مکس کرلینا ہے آپ نے صبح کے وقت پی لینا ہے جب عمل کریں تو کچھ ہی دنوں میں واضح فرق محسوس ہوگا ۔ آپ کا موٹاپا ختم ہونا شروع ہوجائیگا ۔ بہت آسان اور آزمودہ نسخہ ہے اس کو لازمی استعمال کرنا ہے ۔

Sharing is caring!

Categories

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *